حضورنبی کریم صلی اللہ علیہ وآلہٖ وسلم کی اولاد

حضورنبی کریم صلی اللہ علیہ وآلہٖ وسلم کی اولاد
از قلم:… قاری محمد اکرام اوڈھروال ضلع چکوال
حضورنبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم کی اولاد میں 3بیٹے اور4بیٹیاں ہیں جن میں سب سے پہلےحضرت زینبؓ : آپ صلی اللہ علیہ وآلہٖ وسلم کی سب سے بڑی صاحبزادی ہیں ۔ نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہٖ وسلم کی عمر جب 30 سال کی تھی، یہ پیدا ہوئیں۔ ان کے شوہر حضرت ابو العاص بن ربیع ؓ تھے۔ ان سے دو بچے علیؓ اور امامہؓ پیدا ہوئے۔ نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہٖ وسلم کے مدینہ منورہ ہجرت کرنے کے بعد حضرت زینبؓ اپنے شوہر کے ساتھ کافی دنوں تک مکہ مکرمہ ہی میں مقیم رہیں۔
پھر حضرت قاسم رضی اللہ عنہ مکہ مکرمہ میں نبوت سے قبل پیدا ہوئے۔ دو سال چھ ماہ کے ہوئے تو ان کا انتقال ہوگیا۔ بعض حضرات نے لکھا ہے کہ حضرت قاسم7 ماہ کی عمر میں ہی اللہ کو پیارے ہوگئے تھے۔ مکہ مکرمہ میں مدفون ہیں۔ انہیں کی طرف نسبت کرکے آپ صلی اللہ علیہ وآلہٖ وسلم کو ابو القاسم کہا جاتا ہے۔ پھران کے بعدحضرت رقیہ ،پھر ام کلثوم اورپھرفاطمہ رضی اللہ تعالی عنہن ہیں ، اورہر ایک کے بارہ میں کہا گیا ہے کہ وہ اپنی دوسری بہنوں سے بڑی تھی ۔اور حضرت عبداللہ رضی اللہ عنہ مکہ مکرمہ میں نبوت کے بعد پیدا ہوئے۔ 2سال سے کم عمر ہی میں ان کا انتقال ہوگیا۔ مکہ مکرمہ میں مدفون ہیں۔ ان کو طیب وطاہر بھی کہا جاتا ہے۔ ان ہی کی موت پر کسی شخص نے آپ صلی اللہ علیہ وآلہٖ وسلم کو ابتر کہا ( وہ شخص جسکی کوئی اولاد نہ ہو) ، تو سورہ الکوثر نازل ہوئی، جس میں اللہ تعالیٰ نے فرمایا کہ تیرا دشمن ہی بے اولاد رہے گا۔اوریہ سب کےسب حضرت خدیجہ رضی اللہ تعالی عنہا کی اولاد ہیں ، اورکسی دوسری بیوی سے نبی صلی اللہ علیہ وسلم کاکوئی بچہ پیدا نہیں ہوا ، پھر نبی صلی اللہ علیہ وسلم کے ہاں ان کی لونڈی حضرت ماریہ قبطیہ رضی اللہ عنہا سے حضرت ابراہیم رضی اللہ عنہ پیداہوئے ان کی پیدائش مدینہ منورہ میں8 ہجری میں ہوئی۔ حضرت ابراہیم رضی اللہ عنہ کی پیدائش پر آپ صلی اللہ علیہ وآلہٖ وسلم اور صحابہ کرام بہت خوش ہوئے۔ سات دن کے ہونے پر آپ صلی اللہ علیہ وآلہٖ وسلم نے ان کاعقیقہ کیا، بال منڈوائے، بالوں کے وزن کے برابر مسکینوں کو صدقہ دیا، اور بالوں کو دفن کردیا۔ 10ہجری میں 16یا 18ماہ کی عمر میں بیماری کی وجہ سے ابراہیم ؓ کا انتقال ہوگیا۔ ابراہیم رضی اللہ عنہ کے انتقال پر آپ صلی اللہ علیہ وآلہٖ وسلم کافی رنجیدہ ومغموم ہوئے۔ مدینہ منورہ کے مشہور قبرستان (البقیع) میں مدفون ہیں۔ زاد المعاد ( 1 / 103 )حضرت رقیہ رضی اللہ عنہاآپ صلی اللہ علیہ وآلہٖ وسلم کی دوسری صاحبزادی ہیں۔ نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہٖ وسلم کی عمر جب 33سال کی تھی، یہ پیدا ہوئیں۔ اسلام سے پہلے ان کا نکاح ابو لہب کے بیٹے عتبہ سے ہوا تھا۔ جب سورہ تبت نازل ہوئی تو باپ کے کہنے پر عتبہ نے حضرت رقیہ رضی اللہ عنہا کو طلاق دیدی۔ پھر ان کی شادی حضرت عثمانؓ بن عفان سے ہوئی۔ ان سے ایک بیٹا عبداللہؓ پیدا ہوا جو بچپن میں ہی انتقال فرماگیا۔ حضرت رقیہ ؓ ؓ 2 ہجری میں انتقال فرماگئیں ۔ انتقال کے وقت حضرت رقیہ ؓ کی عمر تقریباً 20سال تھی۔حضرت ام کلثوم رضی اللہ عنہاآپ صلی اللہ علیہ وآلہٖ وسلم کی تیسری صاحبزادی ہیں۔ اسلام سے پہلے ان کا نکاح ابو لہب کے دوسرے بیٹے عتیبہ کے ساتھ ہوا تھا۔ جب سورہ تبت نازل ہوئی تو ابولہب کے کہنے پر اس بیٹے نے بھی حضرت ام کلثوم ؓ کو طلاق دیدی۔ حضرت رقیہؓ کے انتقال کے بعد، ان کی شادی حضرت عثمانؓ بن عفان سے ہوئی۔9 ہجری میں انتقال فرماگئیں ۔ انتقال کے وقت حضرت ام کلثومؓ کی عمر تقریباً 25سال تھی۔ حضرت ام کلثوم ؓ کے انتقال کے وقت آپ صلی اللہ علیہ وآلہٖ وسلم نے فرمایا تھا کہ اگر میرے پاس کوئی دوسری لڑکی (غیر شادی شدہ ) ہوتی تو میں اسکا نکاح بھی حضرت عثمان غنی ؓ سے کردیتاحضرت فاطمہ الزہرارضی اللہ عنہا: آپ صلی اللہ علیہ وآلہٖ وسلم کی سب سے چھوٹی صاحبزادی ہیں۔ آپ صلی اللہ علیہ وآلہٖ وسلم حضرت فاطمہؓ سے بہت محبت فرماتے تھے۔ نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہٖ وسلم کی عمر جب 35 یا 41سال تھی، یہ پیدا ہوئیں۔ ان کا نکاح مدینہ منورہ میں حضرت علیؓ بن طالب کے ساتھ ہوا۔ سبحان اللہ ، الحمد للہ، اللہ اکبر کی تسبیحات ‘ حضرت فاطمہؓ کی دن بھر کی تھکان کو دور کرنے کے لئے اللہ تعالیٰ کی طرف سے حضرت جبرئیل علیہ السلام نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہٖ وسلم کے پاس لے کر آئے تھے۔ نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہٖ وسلم کے انتقال کے چھ ماہ بعد حضرت فاطمہ ؓ 23 یا 29سال کی عمر میں انتقال فرماگئیں۔
حضرت فاطمہؓ بنت لنبی ا کی اولاد: حضرت حسنؓ ، حسینؓ ، زینبؓ ، اور ام کلثومؓرضوان اللہ علیہم اجمعین ہیں۔ تواس طرح صحیح یہ ہے کہ نبی صلی اللہ علیہ وسلم کی اولاد کی تعداد سات جن میں تین بیٹے اورچار بیٹیاں ہیں جن کے نام ذيل میں دیے جاتے ہیں:
بیٹے :(1)حضرت قاسم رضی اللہ تعالی عنہ(2) -حضرت عبداللہ رضی اللہ تعالی عنہ(3) -حضرت ابراہیم رضی اللہ تعالی عنہ
بیٹیاں :(1) -حضرت زینب رضی اللہ تعالی عنہا(2) حضرت رقیہ رضی اللہ تعالی عنہا(3) حضرت ام کلثوم رضی اللہ تعالی عنہا(4 )حضرت فاطمہ رضی اللہ تعالی عنہا۔
اللہ کریم اپنے محبوبِ کریم صلَّی اللہ علیہ واٰلہٖ وسلَّم کی محبت اہل بیت ،صحابہ کرام کی محبت میں جینا اور مرنا نصیب فرمائے۔اٰمِیْن بِجَاہِ النَّبِیِّ الْاَمِیْن صلَّی اللہ علیہ واٰلہٖ وسلَّم